Tuesday, February 7, 2017

KHAWAJA UMER FAROOQ

پاکستان سے جُڑنے کیلئے چین کا مزید سرمایہ کاری کا فیصلہ

چین کو پاکستان سے بہتر طریقے سے جوڑنے کے لیے چینی حکومت نے مزید 24.8 ارب ڈالر کی سرمایہ کا فیصلہ کر لیا۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس آف پاکستان کے مطابق چینی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنے مسلم اکثریتی والے صوبے سنکیانگ میں شاہراہوں کا جال بچھانے کے لیے 24.8 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گی۔ واضح رہے کہ سلک روڈ اکنامک بیلٹ کے ذریعے دیگر ممالک سے چین کا جو صوبہ جڑے گا وہ سنکیانگ ہو گا لہٰذا چینی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ یہاں بہترین سڑکیں تعمیر کی جائیں تا کہ پاکستان اور دیگر ممالک کے درمیان بہتر طریقے سے آمد و رفت ہو سکے۔
مختص کی گئی رقم سنکیانگ میں رواں برس ہی استعمال کی جائے گی جو کہ 2016 کی نسبت 6 گنا زیادہ ہے۔ سنکیانگ کے معاشی منصوبہ بندی کے اعلیٰ عہدے دار نے بتایا کہ انفرااسٹرکچر کے نئے منصوبوں کی بدولت علاقے میں سیکڑوں لوگوں کو روزگار ملے گا۔ سنکیانگ ڈویلمپنٹ اینڈ ریفارم کمیشن کے ڈائریکٹر ژینگ چن لن نے بتایا کہ اس خطے میں اس سے قبل اتنے بڑے پیمانے پر کبھی بھی سرمایہ کاری نہیں کی گئی۔ سنکیانگ میں 1.18 ارب ڈالر ریلوے جبکہ 0.7 ارب ڈالر ایوی ایشن کے شعبے میں بھی خرچ کیے جائیں گے۔ واضح رہے کہ اس وقت سنکیانگ کے 40 فیصد شہر اور قصبے ایسے ہیں جو ہائی وے کے ذریعے منسلک نہیں۔

ژینگ کا کہنا ہے کہ 'ہائی ویز کے بغیر سنکیانگ کا تیل، کوئلہ اور زرعی اجناس بہتر طریقے سے صوبے سے باہر نہیں جا سکتا اور ذرائع نقل و حمل ہموار نہ ہونے کی وجہ سے لاگت بھی کئی گنا بڑھ جائے گی'۔ فی الوقت صرف ایک ہائی وے ایسی ہے جو سنکیانگ کو چین کے دیگر مشرقی حصوں سے جوڑتی ہے اور وہ سڑکیں جو اس وقت چین کے پڑوسی ممالک کو سنکیانگ سے جوڑتی ہیں وہ اس قابل نہیں کہ مستقبل میں ہونے والی تجارتی سرگرمیوں کا بوجھ برداشت کرسکیں۔ ژینگ کا کہنا ہے کہ بہتر ٹرانسپورٹیشن کے بغیر سلک روڈ اکنامک بیلٹ کے تحت سنکیانگ کا معاشی حب بننا ممکن نہیں لہٰذا سنکیانگ کو اس چیلنج کا سامنا کرنا پڑے گا۔

چینی حکومت اکنامک بیلٹ کے حوالے سے سنکیانگ کو انتہائی اہم تجارتی مرکز تصور کرتی ہے جس کی سرحدیں قازقستان، پاکستان اور منگولیا سے ملتی ہیں۔
واضح رہے کہ سلک روڈ اکنامک بیلٹ چینی صدر شی جن پنگ کا 'ایک خطہ ایک سڑک' وژن کا حصہ ہے جو انہوں نے 2013 میں پیش کیا تھا اور اس کا مقصد قدیم تجارتی راہداری کو بحال کرنا ہے۔ اس سلسلے میں چین پاکستان میں بھی چائنا پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) پر 46 ارب ڈالر سے زائد کی سرمایہ کاری کر رہا ہے۔

KHAWAJA UMER FAROOQ

About KHAWAJA UMER FAROOQ -

Stand Up for What is Right Even If You Stand Alone.

Subscribe to this Blog via Email :