Header Ads

Breaking News
recent

آپ کے دماغ کی صلاحیت پورے انٹرنیٹ جتنی

تازہ ترین تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ انسانی دماغ ابتدائی اندازوں سے 10 گنا زیادہ معلومات اپنے اندر محفوظ کر سکتا ہے، یعنی لگ بھگ اتنی معلومات جتنی پورے انٹرنیٹ پر پھیلی ہوئی ہے۔ یہ نئی دریافت ظاہر کرتی ہے کہ انسانی دماغ اللہ کی کتنی بڑی تخلیق ہے۔ یہ معلومات سائنس دانوں کو بہتر کمپیوٹر بنانے میں مدد دے سکتی ہے اور ساتھ ہی انسانی دماغ کس طرح کام کرتا ہے، اس بارے میں بہتر معلومات دے سکتی ہے۔

 سالک پروفیسر ٹیری سینوسکی نے کہا کہ ہم نے دماغی نیورونز کے کم توانائی، لیکن زبردست طاقت کے ساتھ کام کرنے کے انداز کو دریافت کیا ہے۔ ایک برقی و کیمیائی سرگرمی جو دماغ میں ہوتی ہے، دو عصبیاتی خلیوں کے درمیان بہتی ہے۔ ہمارا ڈیٹا بتاتا ہے کہ یہ اس سے 10 گنا زیادہ ہے۔

 (اُردو ٹرائب سے ماخوذ)  

No comments:

Powered by Blogger.